براہ کرم پہلے مطلوبہ لفظ درج کریں
سرچ
کی طرف سے تلاش کریں :
علماء کا نام
حوزات علمیہ
خبریں
ویڈیو
15 شَوّال 1445
ulamaehin.in website logo
مفتی اعظم سید احمد علی ره

مفتی اعظم سید احمد علی ره

Mufti Syed Ahmad Ali Musavi

ولادت
25 رجب 1303 ه.ق
لکهنو
وفات
16 ذی الحجة 1388 ه.ق
لکهنو
والد کا نام : مفتی سید محمد عباس
تدفین کی جگہ : لکهنو
مرجع تقلید شیعیان
شیئر کریں
ترمیم
کامنٹ
سوانح حیات
مدرسہ ناظمیہ
مرجعیت
وفات
تصاویر

سوانح حیات

لکھنو کے بزرگ و نامور مجتہد و عالم ، مفتی احمد علی صاحب قبلہ جناب مفتی سید محمد عباس کے آخری فرزند تھے ۔ 25 رجب 1303 کو لکھنو میں متولد ہوئے ۔ ابھی پانچ سال کے بھی نہ ہوئے تھے کہ 24 ربیع الاول 1308 ھ کو جناب مفتی محمد عباس صاحب نے رحلت فرمائی ۔

مولانا احمد علی صاحب نے یتیمی اور زوال و مشکلات کا سخت ترین زمانہ دیکھا ۔ خوش نصیب والدہ نے پرورش کی اور جناب سید ابو صاحب قبلہ نے اپنی توجہ خاص سے استاد زادے کی خدمت کی ۔ مفتی صاحب قبلہ نے مدرسہ سلطان المدارس میں 1312 ھ سے 1317 ھ تک مولوی جعفر حسین صاحب سے تعلیم حاصل کی ۔ پھر آپ کے بہنوئی جناب نجم العلما نے اپنی نگرانی میں لے لیا اور ناظمیہ میں داخل کرکے پڑھایا ۔

ابتدا میں عبادت و وظائف سے زیادہ رغبت تھی اور پڑھنے میں دل نہ لگتا اس لئے 1318 ھ میں اپنی والدہ کے ہمراہ کربلائے معلے تشریف لے گئے اور دل لگا کر پڑھنا شروع کیا ۔ اساتذہ کربلا میں آقای سید کاظم بہبہانی ، آقای شیخ غلام حسین مازندرانی حائری  کا نام مشہور ہے۔ کربلا سے نجف آئے اور آقائے ضیاء عراقی ، آقای مرزا حسین خلیل اور آخوند کاظم خراسانی اور جناب سید محمد کاظم طباطبائی کے درس میں شریک ہوئے۔ چوبیس سال کی عمر میں اجتہاد کے اجازے لئے ۔ اور نجف اشرف سے کربلا ئے معلے آگئے۔ نجف و کربلا ہندی طلباء آپ سے بکثرت پڑھنے آتے رہے۔ اور قوانین و رسائل و شرح لمعہ پڑھاتے رہے ۔

اسی اثنا میں جناب علامہ ہندی سید احمد صاحب کی صاحبزادی سے عقد ہوا ۔ عقد کے کچھ دن بعد دوبارہ عراق گئے اور وہاں پڑھنے پڑھانے کا سلسلہ جاری کیا ۔

عراق سے مستقل آنے کے بعد سید المدارس امروہہ ، ککرولی ضلع مظفر نگر اور جانسٹھ و غیرہ آتے جاتے رہے ۔ ایک مدت کے بعد جناب نجم الحسن صاحب قبلہ نے مدرسہ ناظمیہ میں مدرس فقہ و اصول کے طور پر بلا لیا ۔ یہاں معالم شرائع ، شرح لمعہ ، قوانین اور آخر میں رسائل و مکاسب کا درس دیتے رہے ۔ جناب مفتی صاحب قبلہ مرحوم نے عراق و ہند میں شہرت علمی حاصل کر لی تھے ۔ ان کا درجہ ہندی علما فقہ و اصول میں مسلم تھا ۔ عمر کے ساتھ ان کی عزت و مرجعیت میں اضافہ ہوگیا ۔

مزید دیکھیں

مدرسہ ناظمیہ

جناب نجم العلما نے 1359 ھ میں رحلت کی تو مدرسہ کے تمام انتظامات مکمل طور پر آپ کےذمے آگئے ۔

جناب مفتی احمد علی صاحب قبلہ نے ملک کے بدلے ہوئے حالات شہر کی گھٹیا ساسی فضا اور نا مساعد حالات میں مدرسے کی پرنسپلی سنبھالی اور افریقہ، کشمیر ، عراق و ایران تک مدرسے کی شہرت پھیلائی اور طویل کوشش کے بعد مدرسے کومالی بحران سے نکالا ۔ مدرسہ کی شہرت بحال کی ۔ دنیا بھر کے شیعوں نے مدرسے کی اہمیت محسوس کی ۔ ملک کے گوشے گوشے سے امداد ملی ۔ عراق و ایران کے علما نے کمک کی اور مدرسے کو چار چاند لگ گئے۔ اس سے ان کی انتظامی قابلیت اور محنت میں قوت معلوم ہوتی ہے ۔ مفتی صاحب قبلہ مرحوم  ہندوستان میں مرجع اعظم تھے ۔ عربی و فارسی و اردو میں برجستہ شعر گوئی اور تاریخ کہنا ان کی میراث تھی ۔

مزید دیکھیں

مرجعیت

مفتی صاحب رمضان میں ظہرین کی نماز سوداگر کے امام باڑے والی مسجد میں پڑھاتے تھے ۔ نماز کے بعد وعظ اور وعظ میں خوف خدا اور اخلاق کے درس دیتے تھے ۔

مفتی صاحب سادہ مزاج ، خوش اخلاق اور انتہائی ذہین اور محنتی عالم تھے ۔ ان کے مقلدین پاکستان ، ہندوستان افریقہ تک پھیلے ہوئے تھے ۔ عوام اور حکومت احترام کرتی تھی ۔ ان کی وفات سے لکھنو کی ایک خاص روایت فقہ و فقہاء کا باب ختم ہو گیا ۔

مزید دیکھیں

وفات

جناب مفتی صاحب قبلہ نے چھیاسی سال کی عمر میں 16 ذی الحجہ 1388 ھ میں رحلت فرمائی اور لکھنو مدرسہ ناظمیہ میں دفن ہوئے ۔ 

مزید دیکھیں
تصاویر
مفتی اعظم سید احمد علی موسوی لکهنوی ره
.
مفتی اعظم سید احمد علی موسوی لکهنوی ره
مفتی اعظم سید احمد علی موسوی لکهنوی ره
.
2ڈاؤن لوڈز
زوم
ڈاؤن لوڈ
شیئر کریں
مفتی اعظم سید احمد علی موسوی لکهنوی ره مفتی اعظم سید احمد علی موسوی لکهنوی ره مفتی اعظم سید احمد علی موسوی لکهنوی ره مفتی اعظم سید احمد علی موسوی لکهنوی ره مفتی اعظم سید احمد علی موسوی لکهنوی ره
دیگر علما
کامنٹ
اپنا کامنٹ نیچے باکس میں لکھیں
بھیجیں
نئے اخبار سے جلد مطلع ہونے کے لئے یہاں ممبر بنیں
سینڈ
براہ کرم پہلے اپنا ای میل درج کریں
ایک درست ای میل درج کریں
ای میل رجسٹر کرنے میں خرابی!
آپ کا ای میل پہلے ہی رجسٹر ہو چکا ہے!
آپ کا ای میل کامیابی کے ساتھ محفوظ ہو گیا ہے
ulamaehin.in website logo
ULAMAEHIND
علماۓ ہند ویب سائٹ، جو ادارہ مہدی مشن (MAHDI MISSION) کی فعالیتوں میں سے ایک ہے، علماۓ کرام کی تصاویر اور ویڈیوز کو پیش کرتے ہوۓ، ان حضرات کی خدمات کو متعارف کرواتی ہے۔ نیز، اس سائٹ کا ایک حصہ ہندوستانی مدارس اور کتب خانوں، علماء کی قبور کو متعارف کروانے سے مخصوص ہے۔
Copy Rights 2024